Government College University Faisalabad

One Day Conference on Quaid-e-Azam Muhammad Ali Jinah and Iqbal's Vision of Pakistan

Posted on: 19 Dec 2018

شعبہ تاریخ و مطالعہ پاکستان گورنمنٹ کالج نے اسلامک انسٹیٹیوٹ اسلام آباد کے تعاون سے ایک روزہ کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس کا موضوع’’قائد اعظم محمد علی جناح اور علامہ اقبال کا نظریہ پاکستان‘‘ رکھاگیا ۔ کانفرنس کے افتتاحی اجلاس کی صدارت وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ناصر امین نے کی۔انہوں نے اس موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہماری نوجوان نسل محنت اور ایمانداری سے کام کرے گی تو انشاء اللہ پاکستان کو قائد اعظم محمد علی جناح اور علامہ اقبال کا پاکستان بننے سے کوئی نہیں روک سکتا۔وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹرناصر امین نے مہمانوں کا شکریہ بھی ادا کیا اور عبدالقادر مشتاق اورمنتظمین کو کامیاب کانفرنس منعقد کروانے پر مبارک باد دی۔ اس موقعہ پر پاکستان کی بڑی یونیورسٹیوں کے مقررین جن میں پروفیسر ڈاکٹر محمد اقبال چاولہ،ڈاکٹر عبدالقادر مشتاق صدر شعبہ،صاحبزادہ سلطان احمد علی ، ڈاکٹر عارف خٹک،ڈاکٹر شفیق احمد، ڈاکٹر ابرار احمد، پروفیسر ابرار ظہور، ڈاکٹر وارث اعوان، ڈاکٹر نجیب ، توحید احمد چھٹہ،میڈم ظلِ ہما ڈاکٹر مظہر حیات، ڈاکٹر شمس الرحمان، فیکلٹی ممبران اور طلباء و طالبات کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔صدر شعبہ ڈاکٹر عبدالقادر مشتاق نے مہمانوں کو خوش آمدید کہا اور کانفرنس کے اغراض ومقاصد بیان کئے۔کانفرنس کے مقررین پروفیسر ڈاکٹر محمد اقبال چاولہ،صاحبزادہ سلطان احمد علی ، پروفیسر ڈاکٹر عارف خٹک نے قائد اعظم محمد علی جناح اور علامہ اقبال کا نظریہ پاکستان کو اُجاگر کیا ۔مقررین نے اقبال کی شاعری اور قائد اعظم کی تقاریر کا حوالہ دیا اور طلبہ کو باور کروایاکہ جناح اور اقبال کس طرح کا پاکستان بنانا چاہتے تھے جس میں تمام لوگوں کو برابر کے حقوق دیئے جائیں اور اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ ہو۔کانفرنس میں اسلامک انسٹیٹیوٹ اسلام آبادکی ٹیم نے بھرپور شرکت کی اور کلامِ اقبال پیش کیا۔دیگر مقررین میں ڈاکٹر محمدشفیق نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جناح اور اقبال کا نظریہ واضح تھا کہ مسلمانوں کو یہ حق دیا جائے کہ وہ اپنے فیصلے خود کریں۔ ڈاکٹر اویس نے کہا کہ ابھی دو قومی نظریہ مرا نہیں زندہ ہے ڈاکٹرعارف خٹک نے اقبال کی فارسی شاعری کے ذریعے پیغام کو عام کرنے کی ضرورت پر زور دیا ڈاکٹر عبدالقادر مشتاق نے پیر جماعت علی شاہ ، پیر آف مانکی شریف اور قائد اعظم محمد علی جناح کے کردار پر روشی ڈالی انہوں نے یہ بھی کہا کہ سجادہ نشینوں کو درگاہوں سے نکل کر معاشرے کی بہتری کے لئے کردار ادا کرنا چاہئے۔ پیر بہادر شاہ نے کہا کہ اقبال کے شاہین کو عملی شکل دینے کی ضرورت ہے ڈاکٹر سلیمان نے کہا کہ جناح اقبال کا مردِ مومن ہے۔آخر میں مہمانوں اور مقررین میں شیلڈز تقسیم کی گئیں۔

Search this website